Preventing Digestive Problems

ہمارے کھائے گئے کھانے کی نشاندہی کرنا اور اسے ٹھیک سے ہضم کر کے جسم کا حصہ بنانے کی ذمہ داری نظامِ انہضام کی ہے، نظامِ انہضام کے مسائل عام طور پر ہمارے کھانے کے انتخاب، اوقات اور رفتار کے مناسب نہ ہونے کی وجہ سے پیدا ہوتے ہیں، جس سے بدہضمی، گیس، قبض، السر، معدہ میں انفیکش یا سوزش، ڈکار اور ایسڈ ریفلکس جیسے مسائل کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے، ذیل میں کچھ ایسے مشورے درج کیے جا رہے ہیں جن پر عمل کر کے آپ اپنے نظامِ انہضام کو بہتر بناتے ہوئے معدہ کے کئی مسائل اور امراض سے چھٹکارا پا سکتے ہیں

کھانا ہمیشہ بھوک لگنے پر کھائیں، پیٹ میں ہضم ہونے والا کھانا، موجود ہو تو مزید کچھ کھانے سے گریز کریں، کبھی بھی پیٹ بھر کر کھانا مت کھائیں، کھانا نگلنے سے پہلے اچھی طرح چبا لیا کریں، کھانے کے شروع اور درمیان میں پانی ضرور پئیں اور کھانے کے آخر میں ایک دو گھونٹ سے زیادہ پانی پینے سے گریز کریں، ایک ساتھ مختلف قسم کے کھانے مت کھائیں، کھانا کھاتے وقت زیادہ ٹھنڈا پانی یا کولڈ ڈرنکس کا استعمال معدہ کو کمزور اور ہاضمے کو متاثر کرتا ہے ان سے پرہیز کریں، کھانے کے فوراً بعد چائے یا کافی مت پیا کریں بلکہ وقفہ رکھیں، زیادہ چکنائی اور مصالحے والے اور ڈیپ فرائی کھانوں سے پرہیز کریں، تیزابیت سے بچنے کے لیے مٹھائی، پالک، میتھی، بینگن، سرخ مرچ، مصالحہ جات اور گوشت وغیرہ سے پرہیز کریں، قبض اور گیس کے مریض چاول، نان اور بیکری کی اشیاء سے پرہیز کریں، پانی کا استعمال زیادہ کریں جسم میں پانی کی کمی نہ ہونے دیں، کھانا کھانے کے فوراً بعد لیٹنے يا سونے کی عادت ترک کریں، روزانہ واک اور ہلکی پھلکی ورزش ضرور کریں

اگر صرف پرہیز سے فائدہ نہ ہو رہا ہو تو امراضِ معدہ کے علاج اور پاکستان میں کہیں بھی ہماری ادویات حاصل کرنے کے لیے ہمارے فون نمبر پر رابطہ کیجئے