سوزاک جراثیم کے ذریعے پیدا ہوتا ہے جو جوڑوں کی شکل میں نظر آتے ہیں، یہ جراثیم نظام تولید اور نظام بول و بشرہ میں سرایت پھیلاتا ہے، چھوٹ لگنے کے دو دن سے دو ہفتے کے اندر اس بیماری کی علامتیں ظاہر ہوتی ہیں، سب سے پہلے پیشاب کی نالی کے منہ پر سوزش ہوتی ہے، بعد میں یہی سوزش پیشاب کی پوری نالی میں پھیل جاتی ہے اور پھر تمام اعضائے تولید اس میں مبتلا ہو جاتے ہیں، شدید صورتوں میں مقعد اور آنکھیں بھی اس سے متاثر ہو سکتی ہیں

علامات
اس مرض میں پیشاب کے بعد معمولی یا انتہائی شدید جلن ہوتی ہے جو کئی گھنٹوں تک بھی جاری رہ سکتی ہے، پیشاب کی نالی میں سوزش کے علاوہ اس کا آخری سرا سرخ اور متورم ہو جاتا ہے اور پیشاب کی نالی سے پیپ خارج ہونے لگتی ہے، سوزاک کی وجہ سے جسم کے مختلف جوڑوں گھٹنے، کلائی، کندھا اور کمر وغیرہ میں درد اور ورم کی شکایت ہو جاتی ہے، خواتین میں بھی سوزاک کی وجہ سے پیشاب کی نالی میں سوزش اور پیپ کی شکایت ہو جاتی ہے، شدید صورتوں میں عورت کی قاذف نالیوں میں ورم ہو جائے تو بانجھ پن بھی ہو سکتا ہے، اگر سوزاک کی مریضہ کو حمل ہو جائے تو سوزاک کے اثرات بچے میں بھی منتقل ہو سکتے ہے، اگر سوزاک کا فوری علاج نہ کیا جائے تو یہ مردوں میں سپرمز کی شدید کمی پیدا کر دیتی ہے جس کی وجہ سے اولاد ہونا مشکل ہو جاتا ہے

غذائی پرہیز
مٹھائی، انڈا، مرغی، مچھلی، بڑے جانور کا گوشت، پالک، میتھی، بینگن، چاول، نان، مرچ مصالحے والی اور تلی ہوئی اشیاء سے پرہیز کریں، پھل، سبزیاں، سلاد، دودھ، دہی اور پانی کا استعمال زیاده کریں، پیٹ بھر کے کھانا مت کھائیں بلکہ ہمیشہ بھوک رکھ کر کھایا کریں

جریان، سوزاک اور مردانہ کمزوری جیسے جنسی امراض کے مکمل علاج اور پاکستان میں کہیں بھی ہماری ادویات بذریعہ کوریئر سروس حاصل کرنے کے لئے ہمارے فون نمبر پر رابطہ کیجئے