سر درد کوئی مستقل بیماری نہیں اکثر و بیشتر حالات میں درد سر اندرونی خرابی کا پتہ دیتا ہے جس سے سمجھدار طبیب اصل مرض کو بھانپ لیتا ہے، تشخیص کے بعد پتہ چلتا ہے کہ اصل تکلیف کا سر چشمہ جسم کا کوئی اور حصہ ہے

سر درد کی وجوہات
تفکرات سے چہرے اور ماتھے کے پٹھوں میں تناؤ بڑھ جانے سے سر درد ہوتا ہے، آنکھوں کی کمزوری یا بیماری، کان، ناک، گلے اور دانتوں کے امراض سے، بہت زیادہ جذباتی ہونے، ذہنی جسمانی تھکاوٹ، غصہ، پریشانی آنکھوں کے زیادہ تھک جانے سے، ناقص غذا اور بد ہضمی سے درد شقیقہ یعنی آدھے سر میں درد ہوتا ہے، دماغ کی شریانوں میں خون جمع ہونے سے سر درد ہوتا ہے، بعض درد عارضی ہوتے ہیں جو کم خوابی یا کسی ایسی جگہ رہنے سے ہو سکتے ہیں جہاں تازہ ہوا نہ آ سکے، کسی خاص قسم کی غذا کھانے سے بھی سر درد ہو سکتا ہے جو آپ کے مزاج اور جسمانی ضرورت کے مطابق نہ ہو، نظامِ انہضام میں نقص آجانے اور امراضِ معده، تیزابیت، گیس، معده اور انتڑیوں نیں گرمی و خشکی کی وجہ سے بھی سر درد ہو سکتا ہے، ہائی بلڈ پریشر بھی سر درد کی ایک بڑی وجہ ہے

آسان گھریلو علاج

زیادہ محنت، ذہنی تفکرات رات کو جاگنے اور چکنائی والی اشیاء سے پرہیز کرنا چاہئے

نیند لینے سے ہر قسم کے سر درد میں آرام ملتا ہے، اس لئے سر درد میں کوشش کرنی چاہئے کسی پر سکون گوشے میں اپنی پسند کی خوشبو یا عطر لگا کر آرام کریں

رات کو سوتے وقت پاؤں کے تلوؤں پر گھی کی مالش کرنے سے اچانک ہونے والا سر درد ٹھیک ہو جاتا ہے

جو افراد پرانے سر درد کا شکار ہوں انہیں دن میں کسی بھی وقت سونف ضرور چبانی چاہئے

زکام سے اگر سر درد ہو تو دونوں پاؤں کو گرم پانی میں رکھنے سے آرام آجاتا ہے

مٹی کی گیلی پٹی باندھنے سے سر درد دور ہوتا ہے

آدھے سر کا درد ہو یا پورے سر کا، سونٹھ کو پانی میں پیس کر گرم کر کے ماتھے پر لیپ کریں اور سونگھیں درد ٹھیک ہو جائے گا

سر درد میں بغیر دودھ کی چائے میں لیموں نچوڑ کر پینے سے فائدہ ہوتا ہے

اگر سر درد گرمی کی وجہ سے ہو تو تربوز کا گودا ململ کے کپڑے میں ڈال کر نچوڑ لیں اور اور ایک گلاس میں محفوظ کر لیں اور اس میں مصری ملا کر صبح نہار منہ پئیں

آدھے سر کا درد سورج کے ساتھ گھٹتا اور بڑھتا ہے تو سورج طلوع سے پہلے گرم دودھ پیئیں یا گرم دودھ کے ساتھ جلیبی کھائیں

کالی مرچ چبانے سے بھی سر کے درد میں کمی آتی ہے